Noor-ul-Ain Daira-tul-Khidmat-al-Insaniya

نور العین دائرۃ الخدمت الانسانیۃ
’’مرا مقصود ومطلوب وتمنا خدمت خلق است‘‘

img1

دوسروں کی تکلیف کااحساس اور اسے دور کرنے کی کوشش کرنا ہمیشہ سے جماعت احمدیہ کا شعار رہا ہے۔انسانی ہمدردی کے اسی جذبہ کے تحت ضرورت مند افراد کو اپنے جسم کا خون مہیا کرناایک نہایت گراں قدر خدمت ہے۔مجلس خدام الاحمدیہ نوجوانوں میں اسی جذبہ کو اُجاگر کرتے ہوئے بلاامتیاز ہر ضرورت مند شخص کی ضرورت پوری کرنے کی ہمیشہ تحریک اور جہدوجہد کرتی رہی ہے اور احمدی خدام خدا تعالیٰ کے فضل سے اس میدان میں کئی لحاظ سے شاندار خدمات کی توفیق پارہے ہیں۔مجلس خدام الاحمدیہ پاکستان نے 20جولائی1994ء کو احاطہ بیت المہدی میں’’مرکز عطیہ خون‘‘قائم کیا۔پھر8مارچ1999ء کو احاطہ ایوان محمود میں ایک تین منزلہ عمارت میں منتقل کردیا گیا اوردسمبر2004سے یہ ادارہ ایک وسیع وعریض عمارت میں خدمتِ خلق کی توفیق پارہا ہے۔
جس کا نام حضرت خلیفہ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہِ العزیز نے ازراہِ شفقت
’’نورالعین دائرۃ الخدمت الانسانیۃ‘‘رکھا۔اس ادارہ میں درج ذیل سہولیات مہیا کی گئی ہیں:۔

پیتھالوجی لیبارٹری

اس شعبہ کے تحت تمام ضروری ٹسٹ نہایت مناسب نرخوں پر اور اعلیٰ معیار کے ساتھ سرانجام دیئے جاتے ہیں جس کے لیے
Statefax Chemistry Analyser 1
Humalyser 2
Sysmex Haemotology Analyser 3
Reader Statefax Eliza 4

جیسی اعلیٰ پائے کی مشینری ادارہ میں موجود ہے اور ٹیسٹ سرانجام دینے کے لیے کوالیفائیڈ اور تجربہ کارسٹاف خدمت کی توفیق پارہا ہے۔

بلڈبینک

اس شعبہ کے تحت 24گھنٹے بلاتفریق مذہب و ملت(W.H.O)کے معیار کے مطابق ٹیسٹ شدہ خون متبادل کی بنیاد پر مہیا کیا جاتا ہے ۔ادارہ سے Whole Blood کے علاوہFresh Frozen Plasma(FFP) , Packed Red Cells(PRC)،Platelets اوردیگر خون کی Productsحسب ضرورت حاصل کی جاسکتی ہیں۔
اللہ تعالیٰ کے فضل سے ادارہ ہذاخون حاصل کرنے سے لے کرخون کو محفوظ رکھنے اوراسے بحفاظت ضرورت مند احباب تک پہنچانے کا کام بخوبی سرانجام د ے رہاہے جس میں اوّلین ترجیح حفظان صحت کے اُصولوں کو مدنظر رکھتے ہوئے دکھی انسانیت کی بے لوث خدمات بجا لانا ہے۔نورالعین مرکز عطیہ خونVolunteer Blood Donationاور متبادل کی بنیاد پر خون جمع کرتا ہے۔
بلڈپروڈکٹس بنانے کے لیے جدیدRefrigratoring Centrifugeمشین ادارہ میں موجود ہے۔پلازما علیحدہ کرنے کیلئے Plasma Extractorموجود ہے۔جبکہ پلازما کی سٹوریج کے لئے Plasma Freezerموجود ہے۔جس میں 500بیگ سٹور کیے جاسکتے ہیں۔ Platletsکو کچھ دن تک سٹور رکھنے کے لیےPlatlets Agitatorموجود ہے۔
Whole BloodیاPRCکی سٹوریج کے لیےHelmarکابلڈ بنک موجود ہے۔جس میں بیک وقت 600بیگز سٹور کئے جاسکتے ہیں۔

تھیلسیمیا/ ہیموفیلیاسنٹر

خون ہماری رگوں میں جان بن کر دوڑ رہا ہے۔ اس سیال کا ہمارے جسم میں موجود ہونا ہماری زندگی کی ضمانت ہے۔اگر اس کے کسی جز میں کوئی کمی یا بیماری پیدا ہوجائے تو انسانی زندگی داؤ پر لگ جاتی ہے۔اس میں خرابی جسمانی نظام کو درہم برہم کردیتی ہے۔ وقتی بیماری(infection)تودواؤں سے ٹھیک ہوجاتی ہے مگر خون کی بعض بیماریاں موروثی ہوتی ہیں۔ ان بیماریوں میں سے ایک تھیلسیمیاہے ۔بعض بچوں کو یہ بیماری پیدائشی طور پر ہوتی ہے۔تھیلسیمیاکی تشخیصHb Electrophoresisکے ذریعے ہوسکتی ہے۔یہ بیماری خون کے سرخ ذرات کو متاثر کرتی ہے۔
تھیلسیمیاکاعلاج دو طرح سے ممکن ہے۔
1۔باقاعدہ خون لگوانا(Blood Transfusion)
2۔بنیادی خلیوں کی پیوند کاری(Stem Cell Transplantation)
تھیلسیمیامیجرکی جیسے ہی تشخیص ہوجائے تو ساتھ ہی علاجBlood Transfusionشروع کردینا ضروری ہوتا ہے۔اس بیماری کے شکار بچے اور ان کے والدین دونوں عجیب وغریب کشمکش میں مبتلا ہوتے ہیں۔خون کی2سے3بوتلیں ہر ماہ لگوانا ضروری ہوتا ہے۔
غریب والدین اس خرچ کو اُٹھانے کے متحمل نہیں ہوسکتے کیونکہ انہیں ایک ماہ میں ایک مرتبہ یا بچے کی عمر کے مطابق کئی مرتبہ اپنے خرچ پرخون لگوانا پڑ تا ہے۔ادارہ نورالعین تھیلسیمیاو ہیموفیلیایونٹ خالصتاً خدمتِ خلق کے جذبہ سے سرشار ہو کرایسے بچوں کو مفت خون فراہم کرنے کی توفیق پارہا ہے۔ان بچوں کو مہیا کی جانے والی سہولیات پر تقریباً ماہانہ ایک سے ڈیرھ لاکھ روپے خرچ آتا ہے۔اب تک تھیلسیمیا کے 68مریض رجسٹر ہو چکے ہیں۔
تھیلسیمیاچونکہ نہ ٹھیک ہونے والی بیماری ہے اس لیے بچے نفسیاتی طور پر بھی متا ثر ہو سکتے ہیں۔بچے چڑچڑے ہوجاتے ہیں۔ غصہ بہت آتا ہے اور خوراک سے لاپرواہ ہوجاتے ہیں۔اِن میں مایوسی انتہا تک پہنچ جاتی ہے لہذا ایسے بچوں کے ساتھ بڑے صبرو تحمل اور خوش اخلاقی سے پیش آنا چاہیے تاکہ اِن کے نفسیاتی مسائل مزید بڑھنے نہ پائیں۔ادارہ ہذا کا وہ حصہ جہاں اِن بچوں کو خون لگایا جاتا ہے وہاںTVکی سہولت فراہم کی گئی ہے اور اس حصہ کو بچوں کی دلچسپی کے مطابق کارٹونز کے فلیکسز سے سجایا گیاہے مختلف تہواروں عیدوغیرہ کے موقعہ پر انہیں تحائف بھی دیے جاتے ہیں۔اِس طرح انہیں معاشرہ کا صحت مند حصہ بنانے کے لیے سعی کی جارہی ہے۔
ہیموفیلیابھی تھیلسیمیاکی ہی طرح ایک موروثی مرض ہے۔اس بیماری میں خون بہنے کی صورت میں اسے جمانے کے اجزاء (Factors)کی کمی واقع ہوجاتی ہے چنانچہ جب مریض کو چوٹ یا معمولی زخم لگتا ہے تو خون جاری ہوجاتا ہے اور رکتا نہیں کیونکہ خون میں وہ اجزا نہیں ہوتے جن سے خون رک جاتا ہے ۔
ہیموفیلیاکا درسست اور بہترین علاج یہی ہے کہ ایسے مریضوں میں جن اجزاء (Factors)کی کمی ہوتی ہے وہی اجزاء نس کے ذریعے لگادیئے جائیں۔ادارہ ہذا میں جدید مشینری کی مدد سے خون سے مخصوص اجزاء کو حاصل کرکے مختلف مریضوں کی ضرورت پوری کی جاتی ہے ۔یہاں ان مریضوں کو عطیہ خون اوردیگر علاج مفت مہیا کیا جاتا ہے۔اب تک ہیموفیلیا کے 20مریض رجسٹر ہو چکے ہیں۔

آئی بینک

عطیہ خون کے ساتھ ساتھ عطیہ چشم کی نہایت کارآمد تحریک بھی نومبر 2000ء میں مجلس خدام الاحمدیہ پاکستان نے شروع کی جس کا بنیادی مقصد کارنیا (آنکھ کے بیرونی پردے) کی بیماری کا شکار نابینا افراد کو بینائی فراہم کرنا ہے۔ ایسوسی ایشن کا بنیادی مقصد افراد جماعت کو وصیت عطیہ چشم کی تحریک کے ذریعے آئی ڈونرز بنانا، آئی ڈونر کی وفات کے بعد ان کے کارنیا حاصل کرنا اور موزوں نابینا افراد کو بلا تفریق مذہب وملت یہ کارنیا پیوند کرنا ہے۔ جس کے تحت اب تک 18,123سے زائد احباب جماعت عطیہ چشم کی وصیت کرکے باقاعدہ آئی ڈونرز بن چکے ہیں۔اب تک 229 کامیاب آپریشنز ہو چکے ہیں جن کے نتائج اللہ تعالیٰ کے فضل سے عمدہ رہے۔
ایسوسی ایشن کا مرکزی دفتر و آئی بینک نورالعین کی دیدہ زیب عمارت میں واقع ہے۔ اس عمارت میں شعبہ امراض چشم کا آؤٹ ڈور، مردانہ و زنانہ آئی وارڈز اور آئی آپریشن تھیٹر کی سہولت بھی مومود ہے۔ نیز عمارت کی تیسری منزل پر ایک کشادہ ہال بھی موجود ہے۔ جس میں قریباً سواصدافراد کے بیٹھنے کی گنجائش موجود ہے۔ یہاں تحریک عطیہ چشم اور حفظان صحت کے موضوعات پر سیمینار منعقد کئے جاتے ہیں۔اب تک 15 سیمینارز منعقد کروائے جا چکے ہیں۔
نورآئی ڈونرز ایسوسی ایشن و آئی بینک کا دائرہ کار ملک بھر میں پھیل ہواہے۔ لہٰذا پاکستان بھر میں ایسو سی ایشن کی 26برانچز قائم ہیں۔

ڈینٹل کلینک

نورالعین دائرۃ الخدمت الانسانیۃ کی عمار ت میں 2007ء سے بچوں اور عورتوں کے لئے ڈینٹل کلینک کا آغاز کیا گیا جس کا افتتاح مکرم ومحترم ناظرصاحب اعلیٰ وامیرمقامی مرزا خورشید احمدصاحب نے کیا۔
اب تک ٹوٹل7794 مریضوں کا معائنہ کیاجا چکا ہے۔نیز کئے جانے والے ایکسرے کی تعداد 1378ہے۔ کل -4624 Operative Procedureکئے گئے۔
مجلس خدام الاحمدیہ پاکستان کے تمام ذیلی اِدارہ جات کا مکمل تفصیلی تعارف ماہانہ خالد (جولائی 2005ء) میں شائع ہو چکا ہے۔نورالعین کے متعلق ڈاکومنٹری دیکھنے کے لئے یہاں کلک کریں۔