Sanat-o-Tijarat

شعبہ صنعت و تجارت

1-  احمدی نوجوانوں سے سستی و بیکاری دور کرنے کیلئے سعی کی جائے نیز ان میں کم ہمتی کی بناء پر کلرک بنے رہنے کے رحجان کو دور کیا جائے اور حرفت جیسے معزز پیشے کے کھوئے ہوئے وقار کو پھر قائم کرتے ہوئے انہیں لوہار، درزی، بڑھئی، فٹر، الیکٹریشن وغیرہ کے کام سیکھنے نیز تجارت کا پیشہ اختیار کرنے کی ترغیب دلائی جائے۔ خصوصاً طالب علموں کو ٹیکنیکل اداروں میں تعلیم حاصل کرنے کی تلقین کی جائے۔ اسی طرح دیہات میں رہنے والے زمیندار پیشہ نوجوانوں کو زراعت، پولٹری فارمنگ، فش فارمنگ، باغبانی جیسے کاموں کے کورسز سے متعارف کروایا جائے اور جن کے پاس دیہات میں خاطر خواہ کام نہیں ہے (مثلاً زمین تھوڑی ہے اور کام کرنے والے افراد زیادہ ہیں) گھر سے باہر نکل کر کوئی اور کام کرنے کی ترغیب دی جائے۔
2-  ہر خادم اپنے پیشہ کے علاوہ کم از کم ایک ہنر مزید سیکھے اور زائد آمدنی پیدا کر کے خود بھی فائدہ اٹھائے اور اپنے چندوں میں بھی اضافہ کرے۔
3-  ہنر جاننے والا خادم ہر سال کم از کم ایک خادم کو اپنا ہنر مفت سکھائے۔
4-  بڑی مجالس اپنی اپنی جگہ صنعتی تربیتی ادارے قائم کرنے کی کوشش فرمائیں۔
5-  ضلعی سطح پر ایک انٹرویو کمیٹی قائم کی جائے جس میں ناظم صنعت و تجارت اور مختلف پیشوں سے تعلق رکھنے والے ماہرین فن شامل ہوں۔ اس کمیٹی کے اراکین کے ناموں کی منظوری مرکز سے حاصل کی جائے یہ کمیٹی حسبِ ضرورت اجلاس منعقد کر کے بے روز گار خدام کا انٹرویو لے کر ان کے مناسب حال ذریعہ معاش و روزگار تجویز کرے۔ انٹرویو کمیٹی کے پاس مواقع روزگار کی معلومات بھی جمع ہوں۔ قائدین اپنے ہاں موجود روزگار کے مواقع کی تفصیل مرکز ارسال کریں تا کہ ان معلومات سے دیگر خدام کو بھی مستفید کیاجا سکے۔
6-  سالانہ مقامی اجتماعات کے مواقع پر خدام کی اپنے ہاتھ سے تیار کی ہوئی اشیاء کی نمائش اور فروخت کا انتظام بھی کیا جائے تا کہ دوسرے خدام میں بھی رغبت پیدا ہو۔
7-  مجالس میں موجود مختلف ہنر جاننے والے ماہرین اور تاجروں کے کوائف مرکز بھجوائیں۔
8-  جن مقامات پر کوئی ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹرز موجود ہوں مجالس ان اداروں کے جملہ کوائف کی مرکز کو اطلاع دیں۔ مثلاً ادارہ کا مکمل پتہ، کون کون سے کورسز یہاں کروائے جاتے ہیں، ہر کورس کا عرصہ اور فیس کتنی ہے، معیار کیسا ہے اور داخلہ کب ہوتا ہے، یہاں کیا کیا سہولتیں میسر ہیں۔ وغیرہ۔ ان معلومات سے اپنی مجلس کے خدام کو بھی آگاہ کریں۔
9-  مجالس خدام کو آسان ہنر جو کہ گھریلو طور پر استعمال ہو سکتے ہوں سکھائیں مثلاً سردیوں میں سکوائش، گاجر کا مربہ اور سیب کا مربہ تیار کرنا اور گرمیوں میں آم کا مربہ و چٹنی اور ٹماٹر کی چٹنی وغیرہ تیار کرنا۔ سائیکل مرمت، کرسی کا بننا وغیرہ۔ ٹائپ و شارٹ ہینڈ اور کمپیوٹر ٹریننگ بھی خدام کے لئے بہت مفید ہے۔
10-  سالانہ صنعتی نمائش کیلئے خدام سے نئی اور معیاری اشیاء تیار کروائیں۔ جو اضلاع گزشتہ نمائشوں میں شامل نہیں ہو سکے وہ بھی خصوصی کوشش کر کے امسال اچھی نمائندگی کریں۔ مرکزی صنعتی نمائش میں درج ذیل شعبے ہوں گے۔
الیکٹرانکس، کمپیوٹرز، پینٹنگزو کیلی گرافی، فوٹو گرافی، ماڈلز، ہینڈی کرافٹس، متفرق ۔