Tarbiyyat Nau Mubaeen

شعبہ تربیت نومبائعین

مجلس شوریٰ خدام الاحمدیہ پاکستان1995ء کی سفارش کومنظورکرتے ہوئے سال 95-96ء سے حضرت خلیفۃ المسیح الرابع رحمہ اللہ تعالیٰ نے ازراہ شفقت خدام الاحمدیہ پاکستان میں شعبہ تربیت نومبائعین کی منظوری عنایت فرمائی تھی۔ اس شعبہ کے قیام کا مقصدنومبائع خدام و اطفال کی ایسی بہترین تعلیم وتربیت کرنا ہے کہ وہ حضرت مسیح موعودعلیہ السلام کے قائم کردہ سلسلہ احمدیہ کے شایان شان فعال اور وفادار خدام بن سکیں۔ اس بارہ میں مندرجہ ذیل امور کو بطور خاص مدنظر رکھا جائے۔
1-  خدام و اطفال کی عمر کے جملہ نومبائعین کو (خواہ وہ کسی بھی تنظیم کے ذریعہ جماعت میں داخل ہوئے ہوں) فوری طور پر مقامی تجنید وبجٹ میں شامل کریں۔ جس تجنید و بجٹ میں انہیں شامل نہ کیا گیا ہوگا وہ نامکمل قراردے کر واپس بھجوائے جاسکتے ہیں۔
2-  ان جملہ نومبائع احباب کے باقاعدگی سے مراکزنماز میں حاضر ہو کر نماز باجماعت ادا کرنے کی تلقین و نگرانی فرمائیں خواہ ابتداء میں وہ کسی ایک نمازپر ہی آنا شروع کریں۔
3-  انہیں نمازجمعہ میں لازماً شریک کریں۔
4-  لازمی اور طوعی چندہ جات کی اہمیت وبرکت ان پر واضح کریں اور لازمی طور پر مالی قربانی میں شامل کریں۔ خواہ وہ ابتداء میں بالکل چھوٹی نظر آتی ہو۔
5-  نومبائعین کو حضورانور ایدہ اللہ کی خدمت میں دعائیہ خط لکھنے کی عادت ڈالیں۔ شروع میں اگر عبارت خودبنا کر دینی پڑے تو ضرور ان کی مدد کریں مگر خط انہی کے ہاتھ سے لکھوائیں اور براہ راست یا دفترپرائیویٹ سیکرٹری ربوہ کے توسط سے حضور اقدس کی خدمت میں خطوط ارسال کریں۔
6-  تالیف قلوب کے ممکنہ ذرائع اختیا رکریں مثلاً اجلاسات و اجتماعات میں انہیں بالخصوص شامل کریں۔ علمی وورزشی مقابلوں میں شامل کریں اور انعامات کے ذریعہ ا ن کی حوصلہ افزائی کریں۔
7-  انہیں اپنی خوشی غمی کی سماجی و معاشرتی تقریبات میں شامل کریں تا انہیں صحیح اور حقیقی اطوارکا علم ہو۔ نیزفیملی والے نومبائع احباب کو اپنے گھروں میں دعوت دیں یا اپنی فیملی کے ساتھ ان کے گھروں میں جا کرالفت و قربت پیدا کریں۔
8-  اس ضمن میں ایک نہایت اہم اور ضروری بات یہ ہے کہ ان احباب کو MTAکے پروگراموں خصوصاً حضورایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز کے خطبہ جمعہ میں ضرور شامل کریں اور اس کے لئے مناسب انتظام کرکے مسلسل تلقین اور نگرانی کریں۔
9-  ان احباب کو داعی الی اللہ بنائیں کیونکہ وہ اپنے خاندانوں اور اپنے حلقہ احباب میں موثرداعی ثابت ہوسکتے ہیں۔
10-  ان میں سے منتخب احباب کو زیارت مرکز کیلئے ربوہ لائیں مگرآمد سے قبل رابطہ کے ذریعہ شعبہ ھذا کو اپنے تفصیلی پروگرام سے آگاہ کریں اور مرکز سے اجازت حاصل کرنے کے بعد ان احباب کو لائیں۔علاوہ ازیں اپنے علاقہ کے عہدیداران اور بزرگان سے ان کا تعارف کرائیں تا کہ رابطہ کے علاوہ ان کو نظام جماعت کا بہتر طور پر تعارف ہو اور وہ اپنے آپ کو اس کے مطابق ڈھال سکیں۔
11-  نومبائع خدام و اطفال کے مجالس،ضلع اور علاقہ کی سطح پر الگ اجتماعات کروائیں جن کے جملہ انتظامات نومبائع خدام و اطفال کے ہی سپرد کریں۔